Brief Urdu Description of the Supreme Court Historical verdict by Muhammad Tariq Azhar

Brief Urdu Description of the Supreme Court Historical verdict by Muhammad Tariq Azhar

“ضروی اطلاع “

سپریم کوڑٹ نے آج 16مارچ کو اپنا تفصیلی فیصلہ جاری کردیا جسکا مختصر فیصلہ ۱۹فروری کو پانچ رکنی بینچ جسکے سربراہ جناب محترم چیف جسٹس صاحب تھے، دیا تھا اور اس مختصر فیصلہ میں انھوں نے پی ٹی سی ایل اور پی ٹی ای ٹی کی ، مسعود بھٹی کیس میں فیصلہ کے خلاف جو تین رکنی بینچ نے 7اکتوبر 2011 کو دیا تھا، تمام رویو اپیلیں خارج کردیں . اس تفصیلی فیصلے میں صرف یہ بتایا گیا ھے کے کن وجوھات کی بنا پر یہ رویو پٹیشنیں خارج کی گئيں . اب مسعود بھٹی کے کیس میں سپریم کورٹ کا دیا ھوا فیصلہ جو اب (2012SCMR152) میں درج ھے ایک قانونی شکل اختیار کر چکا ھے جس
سے انحراف کرنا پی ٹی سی ایل اور پی ٹی ای ٹی کے لئے ایک جرم بن جائیگا. اس قانون کے تحت. . . . .
“پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن کے وہ ملازمین جو پی ٹی سی ایل میں ٹرانسفر ھو چکے تھے اور یکم جنوری 1996 سے پی ٹی سی ایل کے ملازم بن گیۓ تھے ، وہ گورنمنٹ پاکستان کے سول سرونٹ کے سرکاری قوانین (Statutory Rules) کے تحت ھی پی ٹی سی ایل میں کام کریں گے( یعنی انکا سٹیٹس پی ٹی سی ایل فیڈرل گورنمنٹ کے سرکاری سول ملازمین جیسا ھی ھوگا). پی ٹی سی ایل یا پی ٹی ای ٹی کو کسی قسم کی پاور یا اختیار بالکل نھیں کے وہ ان ٹرانسفڑڈ سرکاری ملازمین کے سروس کے حقوق اور شرائیط (Terms & Conditions of the services ) میں کسی قسم کی ایسی منفی تبدیلی کریں جن سے انکو نقصان پہنچے . بلکے فیڈرل حکومت کو بھی ایسا کرنے کی ممانعت ھے. یہ فیڈرل حکومت کی گارنٹی ھوگی کے انکے موجودہ “Terms and conditions of services and rights including pensionary benefits” میں کسی ایسی قسم کی منفی تبدیلی نہ لائی جاۓ جس سے انکو نقصان کا احتمال ھو. تاھم فیڈرل حکومت کی یہ گا رنٹی ان ملازمین کے لئے نھیں ھوگی جنھوں نے پی ٹی سی ایل یکم جنوری 1996 کے بعد جوائین کیاھے اور انکی سروس کنٹریکٹ نیچر کی ھے . سپریم کوڑٹ نے اس فیڈرل گورنمنٹ کی گارنٹی کے بارے میں واضح کیا ھے کے پی ٹی سی ایل کبھی بوجہ دیوالیہ اپنی اس زمہ داریوں کو پورا کرنے سے قاصر رھے جن میں ایسےسرکاری ملازمین کو پنشن دینا اور دوسرے فائدے بھی شامل ھیں ، تو اس فیڈرل حکومت کی گارنٹی وجہ سے ان سرکاری ملازمین کو کوئی نقصان نہ پہنچے . دوسرے لفظوں میں یہ کہا جاسکتا ھے کہ کبھی پی ٹی سی ایل پر ایسا وقت آیا اور وہ دیوالیہ ھوگئی ہے تو فیڈرل گورنمنٹ ان ایسے ملازمین کو کسی قسم کا نقصان نہ ھونے دے گی اور خود انکو پنشن اور دوسرے فائدے جو سرکاری نوکری میں ھوتے ھیں ادا کرے گی. . . .”
واسلام
طارق

One Comment

  1. Anwaar Ahmed Malik says:

    please let me know our terms and conditions as we join PTCL dated 11-11-2002 as engineer supervisor outsider batch (F-80)(BPS-11) on regular basis. we were waiting for government scales since privatization of PTCL(2005). now how can we be a contract employees as per your expert (by your self) brief translation of supreme court decision. stop making PTCL regular employees fool/discourage with your foolish/insane expertise…..
    regards
    Anwaar Ahmed Malik

Leave a Reply