PTCL Officials should Implement Court Orders in Pension Case – Shahi Syed

PTCL Officials should Implement Court Orders in Pension Case – Shahi Syed
پی ٹی سی ایل حکام پنشنرز کے معاملے پر عدالتی فیصلے پر عمل کریں، شاہی سید

اسلام آباد(Nawaiwaqt News)سینیٹ قائمہ کمیٹی انفارمیشن ٹیکنالوجی کے چیئرمین سینیٹر شاہی سید نے ہدایت دی ہے کہ پی ٹی سی ایل کے ریٹائرڈ ملازمین کی پنشن میں اضافے پر سپریمکورٹ کے فیصلے کے مطابق من و عن عمل کیا جائے ۔قائمہ کمیٹی نے وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی کو سپریم کورٹ کے حکم کے خلاف نظرثانی اپیل سے منع بھی کیا تھا ۔ وزارت کے افسران نے بھی ریٹائرڈ ہونا ہے سفید ریش بزرگ عدالتوں میں چکر لگا رہے ہیں افسوسناک ہے ۔پیسے وزارت کے افسران نے اپنے گھر سے نہیں دینے ڈرامہ نہ کریں ادائیگیاں کی جائیں اور ہدایت دی کہ چار ہفتوں میں معاملہ حل کیا جائے ۔ سینیٹر رحمان ملک نے کہا کہ کمیٹی کی ہدایت پر عمل نہ کیا گیا تو تحریک استحقاق لائی جائے گی ۔ سینیٹر روبینہ خالد نے کہا کہ مسئلے کو حل ہونا چاہیے مدد کا احساس ختم ہورہا ہے جو خطر ناک ہے ۔ وزارت کے سالانہ بجٹ کے استعمال اور ملحقہ اداروں کے بجٹ کے استعمال پر وزارت حکام نے آگاہ کیا کہ 2016-17 کے سالانہ ترقیاتی منصوبہ جات کے فنڈز 80 فیصد استعمال ہو گئے ہیں اسلام آباد کوریا ایگزم بنک کے اشتراک سے آئی ٹی پارک بنایا جائے گا۔ 100 ملین میں سے 75 ملین قرضہ ہے ۔ سپیشل کمیونیکیشن آرگنائزیشن نے 70 فیصد فائبر آپٹکس کا کام راولپنڈی سے خنجراب تک مکمل کر لیا ہے ۔ آزاد جموں کشمیر میں 11 کلو میٹر مکمل ہوگیا ہے ۔ تھری جی ، فور جی سروس فراہمی کےلئے فرنیکویسی نیلامی کے بعد سروس آزاد کشمیر میں شروع ہو جائے گی۔وزیراعظم سیکرٹریٹ ، ایوان صدر ، ایف پی ایس سی اور دوسرے اداروں اور وزارتوں میں آٹومیشن کا کام جاری ہے ۔ آئی ٹی پارکس کےلئے کراچی اور لاہور میں زمین خریداری کا منصوبہ ہے ۔ ڈی ایچ اے لاہور زمین فراہمی نہیں کر رہا ، چیف سیکرٹری پنجاب کو خط لکھ دیا ہے ۔سینیٹر رحمان ملک نے کہا کہ وزارت آئی ٹی کو زیادہ بجٹ دیا جائے تاکہ ای فائلنگ ، ایڈمنسٹریشن ، کامرس شروع کی جا سکے ۔ چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ وزارتوں اور اداروں میں کارکردگی بہتر نہ ہونے کی بنیادی وجہ کسی ایک عہدے پر زیادہ وقت نہ رہنا ہے ۔ محکموںمیں ہر تین ماہ بعد تین چار افسران تبدیل ہوتے ہیں ایک ہی منصوبے کے سربراہ چھ افسران تک ہوتے ہیں ۔ جاز کمپنی حکام نے آگاہ کیا کہ 263 فرنچائز میں سے 197 بحال کر دے گئے ہیں زیادہ تر کو ادائیگیاں کر دی گئیں ہیں کچھ کے دستاویزات معاملات ہیں ، معاملہ تقریباً حل ہوگیا ہے ۔ چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ کمیٹی ہدایت پر معاملے کو حل کرنے کی تعریف کرتے ہیں ۔ ایف آئی اے حکام نے بتایا کہ این آئی ٹی بی کے 14 منصوبوں کی شکایات کی تحقیقات اور تفتیش جاری ہے ۔ سی ڈی اے میں سافٹ ویئر اور ہارڈ ویئر خرید لیا گیا لیکن استعمال نہیں ہوا ۔ 14 کروڑ کا نقصان ہوا باقی 13 منصوبوں کی تفتیش جاری ہے ۔ سینیٹر تاج آفرید ی نے کہا کہ کیا سی ڈی اے کو ایف آئی اے نے کلین چٹ دے دی ہے ۔ سینیٹر رحمان ملک نے کہا کہ مجرمانہ غفلت پر مقدمہ درج ہونا چاہیے۔

Leave a Reply